آئی ایس آئی، آئی بی نے آڈیو لیکس کی ابتدائی تفتیش کرلی، وزیر داخلہ رانا ثناء اللّٰہ


وزیر داخلہ رانا ثناء اللّٰہ کا کہنا ہے کہ آئی ایس آئی اور آئی بی کے افسران نے آڈیو لیکس کی ابتدائی تفتیش کرلی، دونوں سینئر افسران اس نتیجے پر پہنچ چکے ہیں کہ بادی النظر میں اس آڈیو لیکس کے پیچھے کون ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام “آج شاہزیب خانزادہ کے ساتھ” میں گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللّٰہ نے کہا کہ آئی ایس آئی اور آئی بی کے افسران بدھ کو پی ایم ہاؤس میں ہونے والے قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں اپنی ابتدائی تحقیقات سامنے رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے کوئی بھی حتمی بات مکمل تفتیش کے بعد ہی سامنے آئے گی۔

رانا ثناء اللّٰہ نے کہا کہ اگر وزیراعظم ہاؤس میں کوئی ڈیوائسز لگی ہوئی ہیں، تو یہ معاملہ بہت سنجیدہ ہے، ایسا کرنے والوں کے خلاف ملک کے آئین و قانون کے مطابق کارروائی ہونی چاہیے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ وزیراعظم کے سیکرٹری کا فون بھی ہیک ہو سکتا ہے، صرف یہی نہیں بلکہ میرا فون بھی ہو سکتا ہے، تاہم اس کی مکمل تحقیقات کرنا بہت ضروری ہے، اسی لیے وزیراعظم نے قومی سلامتی کمیٹی کی میٹنگ بلائی ہے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان پہلے اپنی لیک ہونے والی ٹیپ سنبھالیں پھر ہمارے متعلق بات کریے گا، اس کو پتا ہے کہ اس کی حرکتیں ایسی ہے جو کریکٹر ایسی نیشن کے لیے کافی ہیں، فواد چوہدری لیکس آڈیو کی فروخت اور قیمت ایسے بتا رہے ہیں جیسے خود اس میں ایجنٹ ہوں۔

رانا ثناء اللّٰہ نے کہا کہ میں نے  بھی دس مرتبہ کہا ہے کہ توشہ خان میں یہ نااہل ہوگا، عمران خان کو لاڈلہ نہ بنایا گیا تو یہ نااہل ہوگا، توہین عدالت میں ان کو ناک رگڑ کر معافی مانگنی پڑے گی، معافی مانگیں گے تو ہی معافی ملے گی۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ کوئی آڈیو شاڈیو نہیں ویسے ہی چائے کی پیالی میں طوفان کھڑا کر رہے ہیں، کسی کے داماد ہونے سے اگر فائدہ نہیں پہنچنا تو نقصان بھی نہیں پہنچنا چاہیے، پلانٹ اگر آدھا وہاں ہے تو یا وہ حصہ لانے دیں یا یہاں جو آدھا ہے وہ جانے دیں، جنھوں نے ساری زندگی مانگنے کے سوا کچھ نہیں کیا، کیا ان کے نقش قدم پر چلنا چاہیے؟

رانا ثناء نے مزید کہا کہ اس فتنے کا کالج یونیورسٹی لاہور میں جلسہ کروایا جا رہا ہے کیا یہ لاقانونیت نہیں، اس یونیورسٹی کے وی سی کا محاسبہ ہونا چاہیے۔

پی ٹی آئی کے ممکنہ لانگ مارچ سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ ہم نے پورا بندوبست کیا ہے روز روز کی گیدڑ بھبکیاں ہیں کہ ادھر سے آؤں گا ادھر سے آؤں گا، یہ دس پندرہ ہزار لے کر آئے گا ہم نے 50 ہزار کا بندوبست کیا ہوا ہے۔

رانا ثناء اللّٰہ نے کہا کہ ان کو جلسہ اور دھرنا کرنا دیں گے، روٹی چائے پانی بھی دیں گے، اگر ریڈ زون آئیں گے تو پھر ان کا پورا علاج کریں گے۔




Source link

About admin

Check Also

موٹر وے ایم 1 صوابی تا رشکئی کھول دی گئی

دھند کی شدت کے باعث صوابی سے رشکئی تک بند کی گئی موٹر وے ایم …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *