جنرل راوت کی آخری رسومات جمعے کو ادا کی جائیں گی

آنجہانی جنرل بپن راوت کے گھر کے باہر کا منظر

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق ہیلی کاپٹر حادثے میں ہلاک ہونے والے بھارت کے پہلے ( سی ڈی ایس ) چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت اور ان کی اہلیہ کی آخری رسومات جمعہ 10 دسمبر کو ادا کی جائیں گی۔

آخری رسومات بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں کینٹ کے علاقے میں ادا کی جائیں گی۔ بھارتی ملٹری حکام کے مطابق جنرل راوت، ان کی اہلیہ اور دیگر ہلاک افراد کی باقیات کو آج بروز جمعرات 9 دسمبر کو بذریعہ  فوجی ہوائی جہاز سے نئی دہلی منتقل کردیا گیا ہے۔ جہاں سے ان کی باقیات جمعہ کے گھر منتقل کی جائیں گی، جہاں دن 11 سے دن 2 بجے تک لوگ ان کا آخری دیدار کرسکیں گے۔

جمعرات کے روز نئی دہلی میں مرنے والوں کی باقیات پر پھول چڑھانے کی تقریب بھی منعقد ہوگی۔

بدقسمت ہیلی کاپٹر کا خوش قسمت مسافر

ہیلی کاپٹر حادثے میں واحد بچ جانے والے ڈی ایس ایس سی ڈائریکٹنگ اسٹاف گروپ کیپٹن وارن سنگھ ملٹری اسپتال ویلنگٹن میں زیر علاج ہے، جہاں ان کا علاج جاری ہے۔ گروپ کیپٹن ورون سنگھ کو اس سال یوم آزادی کے موقع پر سوریا چکرا سے نوازا گیا۔ انہیں یہ اعزاز 2020 میں فضائی ایمرجنسی کے دوران اپنے ایل سی اے تیجس لڑاکا طیارے کو بچانے پر ملا۔

بھارتی وزیر دفاع

خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ جمعرات کو پارلیمان کے دونوں ایوانوں میں تمل ناڈو میں فوجی ہیلی کاپٹر کے حادثے کے بارے میں بیان دیں گے۔

وزیر دفاع بدھ کی سہ پہر تعزیت کے لیے نئی دہلی میں واقع جنرل راوت کے گھر بھی گئے۔ بھارت کے آرمی چیف جنرل جے جے سنگھ نے این ڈی ٹی وی سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ لاشیں جھلسی ہوئی ہیں جس کی وجہ سے ان کی شناخت میں مشکل پیش آرہی ہے۔

https://encrypted-tbn0.gstatic.com/images?q=tbn:ANd9GcTCz93YU8e6NtiQ1ircQ6ykEarVa5fo84_jQzMoxIfwVL1qzKxrchmlt-ekGpKrR2TEgcU&usqp=CAU

تحقیقات کا حکم

انڈین فضائیہ کا کہنا ہے کہ اس حادثے کی تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے۔ آل انڈیا ریڈیو کے مطابق وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ جمعرات کو پارلیمنٹ میں اس حادثے کے بارے میں مزید معلومات دیں گے، جب کہ انہوں نے نئی دہلی میں جنرل راوت کی رہائش گاہ پر ان کے اہل خانہ سے ملاقات کی ہے۔ مقامی لوگوں نے 80 فیصد جھلسنے والی 2 لاشوں کو مقامی اسپتال منتقل کیا۔

عینی شاہدین نے کیا دیکھا

ایک عینی شاہد نے مقامی میڈیا کو بتایا کہ اُنہوں نے ہیلی کاپٹر کو آسمان سے گرتے ہوئے دیکھنے سے قبل خوفناک، بلند شور سنا تھا۔ کرشنا سوامی نامی فرد نے دی نیوز منٹ کو بتایا: ‘میں نے ہیلی کاپٹر کو نیچے آتے دیکھا، یہ ایک درخت سے ٹکرایا اور یہ جل رہا تھا۔ اُنہوں نے کہا کہ جب میں بھاگتے ہوئے وہاں پہنچا تو گہرا دھواں اٹھ رہا تھا۔ کچھ ہی منٹوں میں آگ میرے گھر سے بھی بلند ہو گئی تھی۔ درختوں اور جھاڑیوں سے اٹی ہوئی پہاڑی میں کریش ہونے کے باعث امدادی کارروائیوں میں تاخیر ہوئی۔

CDS Bipin Rawat's Last Rites To Be Held In Delhi On Friday, Mortal Remains  To Reach Tomorrow | Key Updates

مودی کا افسوس

بھارت کے وزیراعظم نریندر مودی نے ٹوئٹر پر بیان میں کہا کہ جنرل بپن راوت غیرمعمولی سپاہی تھے، حقیقی محب وطن تھے اور ہماری مسلح افواج اور سیکیورٹی آلات جدید بنانے میں بڑا کام کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسٹریٹجک معاملات پر ان کی سوچ اور نکتہ نظر مثالی تھا، ان کے جانے سے مجھے انتہائی دکھ پہنچا ہے۔

دوسری جانب اتراکھنڈ حکومت نے جنرل راوت کی موت پر تین روزہ سرکاری سوگ کا اعلان کیا ہے۔ یاد رہے کہ جنرل راوت کا تعلق اتراکھنڈ سے تھا اور وہ وہیں پیدا ہوئے۔

فوجی ہیلی کاپٹر کو یہ حادثہ بدھ کو تامل ناڈو میں سولور اور کوئمبٹور کے درمیان پیش آیا اور وہ ایک پہاڑی علاقے میں گرا۔ انڈیا کی فضائیہ کے مطابق جو ہیلی کاپٹر حادثے کا شکار ہوا وہ روسی ساختہ اور ایم آئی 17 وی فائیو ماڈل کا تھا۔ واقعہ کی تصدیق بھارتی فضائیہ کی جانب سے مائیکرو بلاگنگ سائٹ پر کی گئی۔

جائے حادثہ سے موصول ہونے والی ویڈیوز میں جائے وقوعہ سے آگ کے شعلے اٹھتے دیکھے جا سکتے ہیں۔





Source link

About admin

Check Also

مری کے ہوٹل میں رات گزارنے والے 3 دوست پر اسرار طور پر ہلاک

مری کے ہوٹل میں رات گزارنے والے چار میں سے 3 دوست پر اسرار طور …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *