خلاف ورزی پرکالجزرجسٹریشن منسوخ کردی جائیگی، پاکستان میڈیکل کمیشن 

پاکستان میڈیکل کمیشن نے ملک بھر کے میڈیکل اور ڈینٹل کالجز کی انتظامیہ کو متنبہ کیا ہے کہ کمیشن کے داخلوں کے طریقہ کار کی خلاف ورزی پر کالجز کی رجسٹریشن منسوخی سمیت سخت قانونی کاروائی کی جائے گی۔ 

پی ایم سی کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں پاکستان بھر کے میڈیکل اور ڈینٹل کالجز کو کہا گیا ہے ایم ڈی کیٹ میں 65 فیصد سے کم نمبر والے طلبہ کو داخلہ نہ دیا جائےبصورت دیگر متعلقہ میڈیکل یا ڈینٹل کالج کی رجسٹریشن کینسل کر دی جائے گی۔ 

اعلامیہ کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے تحت صرف پاکستان میڈیکل کمیشن کے طریقہ کار کے مطابق ہی میڈیکل اور ڈینٹل کالجز میں داخلے ہوسکتے ہیں کیوں کہ پی ایم سی ہی ایم ڈی کیٹ کی پاس پرسنٹیج کا تعین کرنے کا مجاز ہے۔ 

پی ایم سی نے واضح کیا کہ اس سال ایم ڈی کیٹ کی کم از کم پاس پرسنٹیج 65 فیصد یا 137 نمبر ہیں اور لحاظہ اس سال مذکورہ مارکس نہ لے سکنے والے امیدواران داخلے کے اہل نہیں اور ویسے بھی انہیں کمیشن کی جانب سے رجسٹر نہیں کیا جائے گا جس کے سبب وہ ایم بی بی ایس اور بی ڈی ایس کی ڈگریاں ہی نہیں لے سکیں گے۔ 

واضح رہے کہ گزشتہ روز محکمہ صحت سندھ نے ایک نوٹیفکیشن جاری کیا تھا جس کے تحت شہید محترمہ بے نظیر بھٹو میڈیکل یونیورسٹی لاڑکانہ کو کہا گیا تھا کہ سندھ کے میڈیکل اور ڈینٹل کالجوں میں داخلے کے لیے ایم ڈی کیٹ میں 50 فیصد اور اس سے زائد نمبر حاصل کرنے والے طلبہ کو داخلہ دینے کا عمل شروع کرے۔ تاہم اب پاکستان میڈیکل کمیشن کی اس واضح تنبیہہ کے بعد یہ معاملہ بظاہر سنگین ہوتا دکھائی دیتا ہے۔  





Source link

About admin

Check Also

35 کروڑ روپے تاوان کا مطالبہ کرنے والے ملزمان گرفتار

خوشاب پولیس نے باپ اور بیٹے کو اغوا کرکے پینتیس کروڑ روپے تاوان طلب کرنے …

Leave a Reply

Your email address will not be published.