لاہور ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز کے 250 ارب روپے سیلز ٹیکس ریفنڈ کی مد میں پھنس گئے

ایکسپورٹز کا کہنا ہے کہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر بینکوں کے مقابلے میں 15 روپے مہنگا مل رہا ہے۔

لاہور ٹیکسٹائل ایکسپورٹرز کے 250 ارب روپے سیلز ٹیکس ریفنڈ کی مد میں پھنس گئے۔

ذرائع کے مطابق سیلز ٹیکس ریفنڈ نہ ملنے سے ٹیکسٹائل ملز چلانے میں دشواری کا سامنا ہے۔

ایکسپورٹرز کا کہنا ہے کہ کروڑوں ڈالر کا ٹیکسٹائل خام مال پورٹس پر کلیئرنس کا منتظر ہے، بینکوں سے ایل سی نہیں کھل رہیں اور سامان بھی کلیئر نہیں ہو رہا۔

ذرائع کے مطابق بینکوں کی جانب سے ایکسپورٹرز کو اوپن مارکیٹ سے ڈالر خریدنے کا مشورہ دیا جارہا ہے۔

ایکسپورٹز کا کہنا ہے کہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر بینکوں کے مقابلے میں 15 روپے مہنگا مل رہا ہے۔

ایکسپورٹرز کا مزید کہنا ہے کہ اگر یہی حالات رہے تو فیکٹریاں بند ہونا شروع ہو جائیں گی۔




Source link

About admin

Check Also

آئی ایم ایف کا وزیرِ خزانہ اسحاق ڈار اور ٹیم کے اعزاز میں ظہرانہ

پاکستان اور افغانستان کے درمیان دہرے ٹیکس سے بچنے کے معاہدے پر دستخط ایف بی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *